”دانتوں کا پیلا پن اور گندگی صرف دو منٹ میں غائب لاکھوں کا ٹوٹکا فری میں دیا“

”دانتوں کا پیلا پن اور گندگی صرف دو منٹ میں غائب لاکھوں کا ٹوٹکا فری میں دیا“

آپ لوگوں کے ارد گرد یا گھر میں یا آپ لوگوں کے خاندان میں کسی بندے کے دانت بہت زیادہ پہلے ہیں۔ تو آپ لوگ چاہتے ہیں کہ ان کے دانتوں کو سفید ہوناچاہیے اور آپ کے خود کے دانت بہت زیادہ پیلے ہیں۔ یا بلیک ہیں۔ یا بچوں کے چاکلیٹس اور ایسی چیزوں کی کھانے کی وجہ سے ان کے دانت بالکل کالے ہوچکے ہیں۔ یا براؤن ہوچکے ہیں۔ یا پیلے ہوچکے ہیں ۔ اور ان کو آپ مستقل طور پر موتی جیسا کرنا چاہتے ہیں۔ تو اس کے لیے ایک نسخہ ہے۔ جو قدرتی چیزوں پر مشتمل ہے۔ ا س کو استعمال کرکے آپ اپنے دانتوں کو موتی کی طرح یا دودھ جیسا سفید کرسکتے ہیں۔ سب سے پہلے آپ نے لیمن لے لیناہے۔ اس کا رس نکال کر ایک الگ باؤل میں رکھ دیناہے۔ اور اس میں ایک چمچ ہلدی کا ڈال دیناہے۔ اور اس کے بعد ایک چمچ پورا بھر کے سینسو ڈائین ٹوتھ پیسٹ کا ڈال دیناہے۔ یہاں پر کوئی اور آپشن نہیں ہے۔ کیونکہ ویسے تو کولگیٹ بھی استعمال کرسکتے ہیں۔ لیکن یہاں پر آپ نے صر ف سینسو ڈائن استعمال کرنی ہے۔ اب ان چیزوں کو اچھی طرح سے مکس کر لیں۔ جب یہ مکس ہوجائیں تو آپ نے لہسن کاپیسٹ دو سے تین لہسن کے پیس لے کر اس کا پیسٹ بنا لینا ہے۔ باریک باریک پیسٹ بنا کر اس سارے پیسٹ میں شامل کر لینا ہے۔ اور لہسن کا آدھا چمچ پیسٹ ہوناچاہیے ۔ اور ایک چمچ بھر کراس میں سوڈا کا ڈال دیناہے۔ ان تمام اجزاء کو اچھی طرح سے مکس کرلیں۔ اب اس سارے پیسٹ کو محفو ط کرلینا ہے۔ کسی ہو ا بند جار میں۔ اس کے بعد آپ لوگوں نے روزانہ معمول کے مطابق صبح اور رات کو سونے سے پہلے جیسے آپ بر ش کرتے ہیں۔ اسی طرح آپ لوگوں نے پیسٹ اس برش پر لگانی ہے اور برش کرلینا ہے۔ آپ دیکھیں گے کہ روزانہ دو سے تین دن آپ لوگوں کا استعمال ، آپ کے دانتوں کو بالکل سفید کردے گا۔ یہ بہت حیران کن رمیڈ ی ہے۔ اس کا بتانے کا مقصدیہ ہے کہ ہمارے بچے جو ایسی کنڈیشن میں ہیں۔ جو بہت زیادہ چاکلیٹس، کولڈ ڈرنکس اور ایسی چیزیں کھانے کے شوقین ہیں۔ جس سے دانت بہت زیادہ ڈسٹر ب ہوجاتے ہیں۔ کالے ہوجاتے ہیں۔ حتی کہ ٹوٹ جاتے ہیں۔ اوردوسرے دانت آتے ہیں تو وہ بھی زیادہ دیر کھڑے نہیں ہوتے ۔ تو اپنے پہلے پہلے دانتوں کو بچائیں ۔ اوریہ آپ کےساری زندگی استعمال میں آنے ہیں۔ اور اگر آپ کے دانت پیلے ہیں۔ بلیک ہیں۔ تو آپ بھی استعمال کرسکتے ہیں ۔ اور اپنے اہل وعیال کو بھی استعمال کروا سکتے ہیں۔

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *