دانتوں سے پیپ آنا

دانتوں سے پیپ آنا

آج آپ کو بتائیں گے دانتوں سے پیپ کا آنا۔ یہ بہت ہی عجیب سا مرض ہے ۔ آپ خود سوچیں کہ اگر دانتوں سے یا مسوڑھوں سے پیپ آتی ہے تو کیا کیفیت ہوتی ہوگی؟ ہم جس چیز کو کہیں اپنے ریشہ ڈل جاتا ہے ہاتھ میں، دانا بن جاتا ہے۔ ٹانگ پر کوئی دانہ بن جاتا ہے۔ وہاں پر ہم پیپ کو دیکھ کر برداشت نہیں کرسکتے۔ لیکن اگر مسوڑھوں سے پیپ آنا شروع ہوجائے۔ اور منہ سے کتنی بدبوآتی ہے۔ اور کتنا تکلیف کا باعث ہے۔ بندہ کچھ کھانےپینےسے رہ جاتا ہے۔ بڑاسمپل سا نسخہ آپ کو بتانے لگے ہیں۔ انشاءاللہ! بہت مجرب نسخہ ہونے والا ہے۔ آپ نے صرف ایک چیز استعمال کرنی ہے۔ اللہ کے حکم سے آپ کی اس مرض سے جان چھوٹ جائے گی۔ وہ کیا چیز ہے ؟ آپ کو وہ بتادیتےہیں۔ تو سمپل ایک چیز ہے ۔ ہلدی آپ لوگوں نے لے لینی ہے۔ اگر آپ کے گھر میں خشک ہلدی موجود ہے۔ ایک ہلد ی پاؤڈر والی ہے۔ وہ نہیں چاہیے۔ ہمیں ثابت ہلدی چاہیے ہوگی۔ اکثر گھروں میں کچی ہلدی کو لے کر وہ خشک کرکے رکھ لیتے ہیں۔ اس کی کیا ہی بات ہے ؟ وہ تو بہت ہی زبردست ہے۔ لیکن اگر وہ نہیں ہے۔ تو آپ پنسار سے ہلدی لے لیں۔ اور اس کو آگ پر رکھ کر جلا لینا ہے۔اور جلانے کے بعد اسکا پاؤڈر بنالینا ہے۔ بس یہی آپ کی دوا ہے۔ آپ نے روزانہ صبح اور شام دو وقت دن کے اندرآپ نے مسوڑھوں کے اوپر اچھے طریقے سے مل لینا ہےاور تھوڑی دیر کے لیے چھوڑ دینا ہے۔ تقریباً دس سے پندرہ تک لگا رہے ۔ اور منہ نیچے کرکےبیٹھ جائے۔ اور اس کے بعدتازہ پانی کے ساتھ کلی کرلیں۔ صبح وشام روٹین کے ساتھ استعمال کریں۔ انشاءاللہ! جتنی بھی مسوڑھوں سے پیپ آتی ہوگی ۔ اللہ کے حکم سے ختم ہوجائےگی۔ اس نسخے کو تقریباً پندرہ سے بیس دن یا ایک مہینہ تک آپ لو گ استعما ل کرسکتے ہیں

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *