صرف ایک بار یہ پانی پئیں

میں آپ کو ایک چیز بتانا چاہتا ہوں یہ جو ایسیڈ یٹی ہے سب سے زیادہ بیماریاں اسی وجہ سے ہوتی ہیں۔ 80 سے سو بیماریاں اسی وجہ سے ہوتی ہیں۔ میں آپ کو مذاق کی بات نہیں بتارہا ہوں ۔ یہ نیچر ل سولیوشن ہے ۔ آپ کو اس کا ضرور استعمال کرنا چاہیے۔ کیونکہ اس کو کوئی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہے۔ ایسانہیں ہے کہ یہ آج کی ایلو پیتھک کی طرح کا کوئی سائیڈ ایفیکٹ ہو۔آج کل ہم دیکھتے ہیں کہ ہرگھر میں کوئی نہ کوئی بیماری موجو د ہے ہر انسان اپنے بڑھتے ہوئے وزن سے پریشان ہے تو کوئی ڈائیٹ سے ، کوئی تھائی رائیڈسے ، تو کوئی دل کی بیماریوں سے ۔ آپ کو پتہ ہے کہ ہمارے گھروں میں جو بیماریاں ہیں وہ ایک کیٹگری سے آتی ہیں۔ یہ جو ڈاکٹر ہمیں اتنی بیماریوں کے نام بتاتے ہیں ۔ دراصل یہ بیماریاں ہیں بھی نہیں۔ صرف ایک بیماری کے الگ الگ علامات ہیں۔ یہ جو بیماریا ں ہیں تھائی رائیڈ، ڈائبٹیز ، وزن کا بڑھنا، سر درد، ہائی بلڈ پریشر، یہ جتنی بھی بیماریاں ہیں وہ ہوتی کیوں ہیں اگر آپ اس کوپڑھیں گے تو آپ کو ڈائبٹیز کی جتنی بھی بیماریاں ہیں۔

وہ ختم ہوجائیں گی۔ اگر آپ کو تھائی رائیڈ کی وجہ سے پریشا ن ہیں تو وہ بھی ختم ہوجائے گا۔ اگر آپ کاوزن بڑھا ہوا ہے تو آپ کاوز ن کم ہونے لگ جائے گا۔ اگر آپ کے گھٹنوں میں در د رہتا ہے تو وہ درد ایک سے دو مہینوں میں جڑ سے نکل جائے گا۔ آپ سوچ رہیں ہوں گے کہ ایسا کون سا میجک ہے جس کے بارے میں آپ کو بتانے جارہا ہوں۔ یہ ہماری جتنی بھی بیماریاں ہیں وہ ہمارے ہارمونل ان بیلنس بیماریوں کی وجہ سے ہوتا ہے۔ جیسا کہ ڈائبٹیز، تھائی رائیڈز، ان کا سبھی کاہونا ہمارے ہارمونل ان بیلنس کی وجہ سے ہونا ہے۔ اس کو آسان لفظوں میں سمجھ لیں۔ کہ آپ کے جسم میں ایسیڈیٹی بڑھی ہوئی ہے۔ یعنی ایک غذا بھی ہے۔ آپ نے دیکھا ہوگا کہ آپ کبھی کبھار کچھ کھاتے ہیں۔ تو آپ کے گلے میں تیکھا لگتا ہے۔ آپ کا کھایا ہوا کھانا اچھے سے ہضم نہیں ہوتا ہے۔ آپ کو اپنی چھاتی یا گلے میں درد محسو س ہوتا ہے۔ ان سبھی کیسیز میں آپ یہ سمجھ لیں۔ کہ آپ کے جسم میں ایسیڈیٹی بڑھی ہوئی ہے۔

اگر آپ کے جسم میں ایسیڈیٹی بڑھی ہوئی ہے تو اس سے یہ ساری بیماریاں پیدا ہوتی ہیں۔ اب ایسیڈیٹی بڑھتی کیوں ہے؟ وہ آپ کے ایسیڈیٹی کھانا کھانے کی وجہ سے ہوتا ہے۔ یعنی ایسا کھانا جس میں ایسڈ زیادہ ہو جیسا کہ چائے، مرچ مصالحوں کا زیادہ استعمال ، یا پھر تلی ہوئی چیزوں کا زیادہ استعمال کرنا ، ایسی چیزیں کھانا جو آپ کے جسم میں ہضم بھی نہیں ہوتیں۔ یہ چیزیں آپ کے جسم میں سڑتی رہتیں ہیں۔ اور ایسڈ پیداکرتی ہیں۔ کیونکہ ایسڈ ہمارے خون میں مل جاتا ہے۔ تو ہمارے خون میں ایسیڈیٹی بڑھ جاتی ہے۔ یہ ایسیڈ یٹی بڑھنے سے آپ کا ہارمونل ان بیلنس ہوجاتا ہے۔ ہماری جسم کا ٹمپریچر نارمل سے گر م رہنا لگتا ہے۔ اس وجہ سے ہمارے ہارمونل میں ان بیلنس ہوجاتا ہے۔ تو اس طرح کچھ وقت گزرتے ہی آپ کو ڈائبٹیز ہوجاتی ہے۔ تھائی رائیڈز ہوجائے گا۔ آ پ کا وزن بڑھ جائے گا۔ آپ کے گھٹنوں میں درد رہنے لگے گا۔ آپ کے جسم میں سوجن ہوسکتی ہے آپ کے سرمیں درد ہوسکتاہے۔ ہائی بلڈ پریشر ہوسکتا ہے۔

بال جھڑنے شروع ہوسکتے ہیں۔ ایسیڈیٹی بڑھنے سے کیا ہوتا ہے کہ ہمارے میٹابولزم پروسس بہت ہلکا ہوجاتا ہے۔ اب یہ میٹا بولزم ہمارے کھانے کو انرجی میں کنورٹ کرنے کا کام کرتا ہے۔ لیکن میٹا بولزم بھی اچھے سے کام نہ کرے۔ تو آپ کا کھایا ہوا کھانا انرجی کی جگہ پر یہ چربی کی شکل اختیا ر کرکے جسم میں جمع ہونا شروع ہوجاتا ہے۔ جس سے آپ کاوز ن بڑھنے لگتا ہے۔ تو اس کا سلولیوشن ہے اجوائن کے پانی کا استعمال کرنا۔ جب آپ صبح خالی پیٹ اجوائن کا پانی پئیں گے۔ تو آپ کا میٹا بولز م پروسس بوسٹ ہوگا۔ جس سے آپ کا وز ن بہت تیز ی سے کم ہونے لگے گا۔ اگر آپ اجوائن کے پانی کا استعمال دو سے تین دن کریں گے تو آپ بنا ڈائیٹ یا ایکسر سائز کے آپ اپنا وزن کم کرسکتےہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *