تخم ملنگا کے انتہائی حیرت انگیز فوائد جن کاجاننا ۔۔؟؟

برصغیر کے ملکوں میں تلسی کےپودوں سے حاصل ہونے والے سیاہ بیج جنہیں عام طور پر تخم بلنگا کہاجاتا ہے۔ گرمی کے دنوں میں شربتوں اور فالودہ میں بہت ذوق وشوق سے استعمال کئے جاتےہیں۔ ان بیجوں کوتھوڑی دیر کےلیے پانی میں چھوڑ دیا جائے تو ان کے گر د جیلی جیسا سفید مادہ نمایاں ہوجاتا ہے۔ مغربی ممالک میں تخم بالنگا جیسے ایک اور قسم کے بیج پودوں سے حاصل کئے جاتے ہیں۔ جنہیں سیاہ سیڈز بھی کہتے ہیں۔ یہ دونوں بیج اگرچہ مختلف ہیں ۔تاہم ان کے طبی فوائد بے شمار ہیں۔ بنگلور کی غذائی ماہر ڈاکٹر انجوسود کہتی ہیں کہ تخم بالنگا پروٹینز، کاربو ہائیڈ ریٹس ، ضروری چکنائیوں اور ریشوں سے بھر پور ہوتے ہیں۔ جبکہ ان بیجوں میں حرارے نہیں ہوتے۔ سیاہ بیج میں شامل اینٹی آکسیڈینٹ اجزاء ذیا بیطس کنٹرول کرنے میں مدد کرتے ہیں۔

اور جلد کو بھی فائدہ پہنچاتے ہیں۔ انہیں چبا کرکھانا مشکل ہوتا ہے۔ اس لیے کبھی کچے بیج نہ کھائیں بلکہ استعمال سےپہلے انہیں سادہ یا نیم گرم پانی میں بھگو لیں ۔ تاکہ وہ جیلاٹین جیسے بن جائیں اور آسانی سے نگلے جاسکیں۔ صحت کو فائدہ پہنچانے کےلیے ضروری ہے کہ روزانہ کم ازکم چائے کے دو چمچ کی مقدار میں انہیں پانی میں بھگو کر استعمال کیاجائے۔ وزن کم کرنے کےلیے : تخم بالنگا ایلفا لائنو لینک ایسڈ زیادہ ہوتے ہیں۔ جوان میں موجود اومیگا تھری فیٹی ایسڈز سے حاصل ہوتےہیں۔ یہ فیٹی ایسڈز جسم میں تحلیل غذاء کے دوران چربی جلانے میں مدد گا ر ہوتے ہیں۔ چونکہ ان بیجوں میں فائبرز بھی ہوتے ہیں۔ جن سے شکم سیری کا احساس زیادہ دیر تک برقرار رہتا ہے۔ اس لیے طبیعت زیادہ کھانے کی طرف مائل نہیں ہوتی۔

آپ پانی میں نرم کئے ہوئے ان بیجوں کو دہی میں یا فروٹ سلاد پر چھڑک کر استعمال کرسکتےہیں۔ جسم کی گرمی کم کرنے کےلیے : تخم بالنگا کے بیجوں کو لیموں پانی ، روح افزاء یا دیگر شربتوں میں ملا کر اس لیے پیا جاتا ہے۔ کہ شدید گرم موسم میں جبکہ جسم کا درجہ حرارت بھی بڑھ جاتا ہے۔ اسے کم کیا جاسکے اور لو لگنے کے مضر اثرات سے حفاظت ہو۔ تھائی لینڈ میں جب گرمی عروج پر ہوتی ہے۔ تو وہاں کے لوگ پانی ، شکر ، شہد اور ناریل کے دودھ میں تخم بالنگا کو گھو ل کر بطور مشروب استعمال کرتےہیں ۔ بلڈ پریشرکو کنٹرول کرنے کےلیے : ذیا بیطس کےمرض میں صبح ناشتے کے موقع پر ایک گلاس دودھ میں تخم بالنگا کو ملائیں اور اسے پی جائیں۔ یہ ان کےلیے ایک صحت بخش مشروب ہوگا۔ یہ مشروب جسم میں تحلیل غذا ء کی رفتار سست کردے گا۔

اور کاربوہائیڈریٹس بہت تیزی سے گلو کوز میں تبدیل نہیں ہوں گے۔ اور اس طرح خ ون میں شکر کی سطح پر قابو رہےگا۔ قبض اور گیس سے نجات کےلیے : اگر ایک گلاس دودھ میں تخم بالنگا کی کچھ مقدار بھگو کر روزانہ رات کو سونے سےپہلے پی لیا جائے ۔ تو چند روز تک اس کے مسلسل استعمال سے آنتیں متحرک ہوجائیں گی اور قبض کی دیر ینہ شکایت دور ہوجائےگی۔ یہ بیج معدے اورآنتوں کی صفائی کافریضہ انجام دیتے ہیں۔ ان میں ایک ایسی چکنائیاں ہوتی ہیں۔ جو گیس خارج کرنے اورکھانا ہضم کرنے میں معاونت کرتی ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.