گلے کے دردکا آسان گھریلوعلاج

آج جو ہمار اٹاپک ہے وہ گلے کے درد کے حوالے سے ہے۔ آجکل موسم کی تبدیلی کی وجہ سے گرمی زیادہ ہورہی ہے۔

لوگ بہت زیادہ ٹھنڈا پانی پی رہے ہیں۔ بعض لوگ لیموں والا پانی استعمال کرتے ہیں۔ اس سے یہ ہوتا ہے بعض لوگوں گرمی کی وجہ سے فوراً پنکھے کے نیچے آکر بیٹھتے ہیں۔ یابا ہر گرمی سے آئے اور فوراً ٹھنڈا پانی پی لیا۔ اس سے یہ ہوتا ہے کہ گلے میں خراش ہوجاتی ہے۔ بعض لوگوں کے ٹانسلز بڑھ جاتے ہیں۔ بعض لوگوں کو اس کی وجہ سے کھانسی شروع ہوجاتی ہے۔ اسکےلیے آپ پہلے یہ کریں۔ جب بھی آپ باہر شدید گرمی سے آئیں۔ تو فورا ً نہ ٹھنڈا پانی سے نہائیں۔اور نہ پانی استعمال کریں۔ دوسرا جو ہے آپ کولڈ ڈرنک سے بچیں۔ کیونکہ یہ آپ کے گلے میں خشکی پیدا کرکے وہاں پر انفیکشن پید اکرسکتے ہیں۔ دوسرا بہت زیادہ چیخنا چلانا ، اس کے علاوہ بہت زیادہ غم یا بہت زیادہ رونے دھونے کی وجہ سے بھی مسئلہ ہوسکتا ہے۔

گلے میں انفیکشن کی وجہ سے خراش پیدا ہوسکتی ہے۔ بعض لو گ جو پان اور گٹکے وغیرہ استعمال کرتے ہیں۔اس سے بھی انفیکشن پیدا ہوسکتی ہے۔ اس کے لیے آپ ایک ٹوٹکہ استعمال کریں۔ ملٹھی ، گاؤزبان اور سونف کا استعمال کریں۔ یہ تینوں برابروزن لے لیں۔ ان کو دو تین گلاس پانی میں ڈال کر ابال لیں۔ جب آدھا گلاس پانی رہ جائے تو اس کو چھان کر اس میں شہد سے میٹھا کرکے آپ پی لیں۔ اس کے علاوہ ملٹھی ہے یہ آپ ایک تولہ لے لیں۔ کسر شیریں ایک تولہ ، مصری دوتولہ لے لیں۔ ان تین چیزوں کو برابر وزن پیس لیں۔ اس کا ایک چوتھائی چمچ پانی کے ساتھ کھا لیں۔ اس سے کافی حد گلے میں بہتر ی آئے گی۔ اس کے علاوہ توت سیاہ قرشی کا شربت ہوتا ہے۔ وہ لے لیں۔ وہ تھوڑا تھوڑا منہ میں رکھ کر چاٹیں۔ اگر گلے میں بہت زیادہ تکلیف ہے ۔ درد ہے۔ توآپ پودینے کے پتے لے لیں۔ اس کو پانی میں ابال لیں۔ اس میں تھوڑا سا نمک ڈال کر اس کے غرارے کر لیں۔

اس سے بھی آ پ کے گلے کے درد میں کافی بہتر ی آئے گی۔ اس کے علاوہ سویلین ٹیبلٹ ہیں۔ وہ چوسنے کےلیے استعمال کرلیں۔ صوفی کول استعمال کریں۔ یا لوح قربستان ہے۔ وہ لے کر منہ میں رکھ کر اس کو آہستہ آہستہ چوستے رہیں۔ تاکہ گلے میں لگتا جائے تو اس سے بھی آپ کا گلہ کافی حد تک بہتر ہوجائےگا۔ اگر آپ کے گلے میں انفیکشن زیادہ ہوگیا ہے۔ آپ ملٹھی کا استعمال زیادہ کرلیں۔ یا پھر ہلدی کا کیپسول بھر کر وہ کھائیں۔ کم ازکم ہفتہ دس دن کھائیں۔ ہلدی اینٹی بائیو ٹک بھی ہے اور اینٹی سیپٹک بھی ہے۔ وہ آپ کے گلے کے سارے معاملات کو بہتر کردے گی۔ ٹھنڈا پانی وغیرہ نہ پئیں۔ اگر آپ کے ٹانسلز بڑھ گئے ہیں۔ اس کے لیے چھوٹا سا فارمولا بتادیتے ہیں۔ اس سے آپ کا گلے کا ٹانسلز مسلسل استعمال سے ٹھیک ہوجائےگا۔ اس میں کسر شیریں لے لیں۔ ہلدی لے لیں۔ ملٹھی لے لیں۔ یہ تینوں چیزوں برابر وزن لے لیں۔ ان کو باریک پیس کر ان کاچوتھائی چمچ پانی کے ساتھ کھاتے ہیں۔ یہ مسلسل پندرہ دن اور مہینہ استعمال کریں۔ اس سے گلے کے ٹانسلز بالکل ٹھیک ہوجائیں گے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.