خشک خوبانی چھوہارا کھانے کا اصل طریقہ

خشک خوبانی ایسی صحت بخش غذا ہے جو آپ کو پورے سال دستیاب ہوتی ہے- خشک خوبانی کا ایک چھوٹا سا دانہ اپنے اندر صحت کا ایک ایسا خزانہ چھپائے ہوئے ہوتا ہے جس سے فائدہ صرف وہی انسان اٹھا سکتا ہے جو اس کی حقیقت سے واقف ہوتا ہے- خشک خوبانی متعدد طبی فوائد کی مالک ہوتی ہے اور اس کا استعمال آپ کو کئی عام امراض سے محفوظ رکھتا ہے- خشک خوبانی کو خوراک کا حصہ کیوں ضرور بنانا چاہیے؟آئیے ہم آپ کو بتاتے ہیں: بہترین نظر خشک خوبانی میں دو ایسے غذائی اجزاﺀ بھاری مقدار میں پائے جاتے ہیں جو بینائی کی حفاظت کرتے ہیں جو عمر میں اضافے کے ساتھ ساتھ کمزور ہورہی ہوتی ہے- خشک خوبانی کا استعمال موتیے کے خطرات کو کم کرنے میں بھی مددگار ثابت ہوتا ہے-نظامِ ہضم کھانا کھانے سے قبل خشک خوبانی کا استعمال ہمارے نظامِ ہضم کو بہتر بناتا ہے- اس کے علاوہ خشک خوبانی قبض کے حوالے سے مددگار ثابت ہوتی ہے اور ساتھ ہی ناپسندیدہ مواد کو خارج بھی کرتی ہے-صحت مند دل خشک خوبانی میں فائبر کی بھاری مقدار پائی جاتی ہے جو جسم میں موجود برے کولیسٹرول کی سطح کو کم کرتی ہے- اسی وجہ سے دل کے امراض لاحق ہونے کے خطرات میں بھی کمی واقع ہوتی ہے- اس دوران خشک خوبانی جسم میں بہترین کولیسٹرول کی سطح میں اضافہ بھی کرتی ہے- روزانہ آدھا کپ خشک خوبانی کھانا دل کی صحت کے لیے مفید ہے-

خون کی کمی سے بچاؤ خشک خوبانی آئرن کے حصول کا ایک بہترین ذریعہ ہے جو کہ خون کی کمی خلاف مزاحمت کرنے کے حوالے سے مفید ثابت ہوتا ہے- عام طور پر خواتین حیض کی وجہ سے خون کی کمی کا شکار رہتی ہیں اس لیے انہیں چاہیے کہ ایسی غذائیں استعمال کریں جن میں آئرن کی بھاری مقدار پائی جاتی ہو- اگر آپ خشک خوبانی کو اپنی روزمرہ کی خوراک میں شامل کریں گے تو یہ ہیموگلوبین کی سطح میں اضافے کا باعث ہوگا-کینسر سے بچاؤ خشک خوبانی میں بھاری مقدار میں پائے جانے والے اینٹی اوکسیڈنٹس کینسر جیسے موذی مرض کے لاحق ہونے کے خطرات کو کم کرتے ہیں- اس کے بیج کینسر کی افزائش کا خاتمہ کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں- کینسر کے مریضوں کو یہ 5 بیج ایک گلاس اورنج جوس کے ساتھ روزانہ صبح ناشتہ میں اس وقت تک کھانے چاہئیں جب تک کہ کینسر کے غیر معمولی خلیوں کا خاتمہ نہیں ہوجاتا-وزن میں کمی خشک میں پائی جانے والی فائبر کی بھاری مقدار نہ صرف آپ کے نظامِ ہضم کو بہتر بناتی ہے بلکہ میٹابولک کی کارکردگی کو بھی مزید فعال بناتی ہے- اور اسی وجہ سے آپ کا وزن بھی کم ہوجاتا ہے-

اس کے علاوہ خشک خوبانی میں کیلوریز بھی بہت کم پائی جاتی ہیں-ہڈیاں خشک خوبانی کیلشیم سے بھی بھرپور ہوتی ہے اور ہم سب اس بات سے بخوبی واقف ہیں کہ کیلشیم ہماری ہڈیوں کی بہترین صحت کے لیے سب سے ضروری ہے- اس کے علاوہ خشک خوبانی میں پوٹاشیم بھی پایا جاتا ہے جو کہ ہمارے جسم میں کیلشیم کے تقسیم کے حوالے سے اہم کردار ادا کرتا ہے- اور یہ تمام عوامل ہڈیوں کی مضبوطی کے لیے انتہائی اہم ہیں-بخار خشک خوبانی میں بخار کی حدت کو کم کرنے کی صلاحیت بھی موجود ہوتی ہے- روزانہ ایک کپ خشک خوبانی کے جوس میں ایک چائے کا چمچ شہد شامل کر کے پئیں- یہ آپ کو پیاس سے بھی آرام دے گی-جلد خشک خوبانی کو جلد سے متعلق مسائل مثلاً سورج کی جلن کی وجہ سے ہونے والی خارش اور ایگزیما وغیرہ سے بھی آرام کے لیے بھی استعمال کیا جاسکتا ہے- خشک خوبانی کیل مہاسوں اور جلد کے دیگر مسائل کے خلاف بھی مددگار ثابت ہوتی ہے- خشک خوبانی کا تیل جلد کی حفاظت کے لیے مفید ہے- اور یہ آپ کی جلد کو ہموار اور چمکدار بھی بناتا ہےچھوہارہ مشہور عام میوہ ہے اس کا رنگ سرخ ذائقہ شیریں اور مزاج گرم اور تر ہوتا ہے۔ اس کی مقدار خوراک چار سے آٹھ عدد تک ہے۔

اس کے حسب ذیل فوائد ہیں۔چھوہارے کے فوائدچھوہارہ خون صالح پیدا کرتا ہے۔کثیر الغذا ہونے کے ناطے سے بدن کو موٹا کرتا ہے۔کمر درد کیلئے بے حد مفید ہے۔ ایسی صورت میں دودھ کے ہمراہ استعمال کرنا چاہئے۔گردوں کو طاقت دیتا ہے۔سینے اور پھیپھڑے کو طاقت دیتا ہے۔چھوہارے کی گٹھلی عرق گلاب میں گھس کر اگر گوہانجنی پر لگائی جائے تو جلدی آرام آ جاتا ہے۔چھوہارے کی گٹھلی کو بھون کر بطور کافی استعمال کیا جاتا ہے۔سرد مزاج والوں کیلئے مفید ہے جبکہ گرم مزاج والوں کو نقصان دہ ہےامراض بلغمی بارد میں مفید ہے۔فالج اور لقوہ میں چھوہارے کو دودھ میں ابال کر پلانے سے فائدہ ہوتا ہے ایسی صورت میں پانچ عدد چھوہارے اور ایک پائو دودھ صبح و شام استعمال کرنا چاہئے۔نزلہ زکام کو دور کرنے کیلئے چھوہارے چار عدد ستاور اور ملٹھی چھ چھ ماشے کو جوشاندہ بنا کر پلانے سے پسینہ آ کر طبیعت کھل جاتی ہے اور زکام بھی ٹھیک ہو جاتا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.